ایشیا کپ: میزبانی کے معاملے پر پی سی بی کی سری لنکا کو پیشکش

(آئی این این نیوز)

لاہور: ‏ پاکستان اور سری لنکا کے کرکٹ بورڈز ایشیا کپ 2020 کی میزبانی کا تبادلہ کرنے کیلئے رضا مند ہیں، ایونٹ کی میزبانی کا تبادلہ کرنے کی تجویز گزشتہ روز ایشین کرکٹ کونسل (اے سی سی) کے اجلاس میں سامنے آئی۔

‏ایشیا کپ کرکٹ ٹورنامنٹ 2020 کی میزبانی پاکستان کو کرنی ہے لیکن کووڈ 19 کی وجہ سے اب تک ایونٹ کے وینیو اور شیڈول کو حتمی شکل نہیں دی جاسکی۔ ان ہی معاملات کو دیکھنے کیلئے گزشتہ روز اے سی سی ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا جس میں میزبانی کی تبادلے کی تجویز سامنے آئی۔

 اے سی سی نے اعلان کیا تھا کہ ایشیا کپ کے انعقاد کے حوالے سے حتمی فیصلہ جلد کیا جائے گا۔ ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ ایشیا کپ کی میزبانی کا سری لنکا کرکٹ سے تبادلہ کرنے کیلئے رضا مند ہے۔

ایشیا کپ 2020 کا میزبان ملک پاکستان ہے لیکن کووڈ 19 کی وجہ سے اس وقت ایشیا کپ کا انعقاد مشکل دکھائی دے رہا ہے۔

بھارت کے پاکستان آ کر نہ کھیلنے کی وجہ سے پاکستان پہلے ہی دبئی یا کسی دوسرے وینیو پر ایونٹ کے انعقاد کا سوچ رہا تھا جو کہ اب کووڈ 19 کی وجہ سے اور بھی مشکل ہو گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پی سی بی اس برس میزبانی کے تبادلے کیلئے رضا مند ہے، اس مرتبہ سری لنکا ایونٹ کی میزبانی کر سکتا ہے جبکہ پاکستان اگلے ایشیا کپ کی میزبانی کر سکتا ہے جوکہ 2022 میں ہوگا۔

ا سے ابھی ایک تجویز ہی قرار دیا گیا ہے جس پر دونوں بورڈز رضا مند ہیں لیکن حتمی فیصلہ اے سی سی کے اگلے اجلاس میں کیا جائے گا۔

پی سی بی ذرائع نے اس تجویز اور پی سی بی کی رضا مندی کی تصدیق کی ہے کیونکہ پی سی بی چاہتا ہے کہ موجودہ صورتحال میں کرکٹ کی سرگرمیاں ہونی چاہئیں ان کا تسلسل ہونا چاہیے ، سری لنکا میں ایونٹ کرانے کی تجویز اس لیے سامنے آئی کیونکہ وہاں کووڈ 19 کے حوالے سے صورتحال تیزی سے بہتری کی جانب گامزن ہے۔

 یاد رہے کہ اس ٹورنامنٹ کی میزبانی پاکستان نے متحدہ عرب امارات میں کرنی تھی تاہم کوویڈ 19 کی صورتحال اب بھی عرب ممالک میں بہتر نہیں ہوئی ہے اور پی سی بی کو وہاں ٹورنامنٹ کی میزبانی میں مشکل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

شمی سلوا نے کہا کہ ہم نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) سے بات چیت کی ہے اور موجودہ عالمی صورتحال کی وجہ سے وہ پہلے ہی اس ایڈیشن کی میزبانی ہمیں دینے پر اتفاق کر چکے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ آج ایشین کرکٹ کونسل کا آن لائن اجلاس ہوا جس میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے بنیادی طور پر ٹورنامنٹ کی میزبانی کے لئے ہمیں گرین سگنل دیدیا۔

سلوا نے مزید کہا کہ انہیں اب حکومت سے ایونٹ کی میزبانی کے بارے میں بات چیت کرنی ہوگی اور کوویڈ 19 پروٹوکول کو مدنظر رکھتے ہوئے اس ٹورنامنٹ کی میزبانی کے بارے میں میڈیکل عہدیداروں کو شامل کرکے ایک مناسب منصوبہ بندی کرنا ہوگی۔

یاد رہے کہ ایشیاء کپ میں 5 مکمل ممبران بھارت ، پاکستان ، سری لنکا ، بنگلا دیش اور افغانستان کے ساتھ ساتھ کوالیفائنگ ٹورنامنٹ کی فاتح ٹیم شامل ہوگی ۔ بھارت ٹورنامنٹ کا دفاعی چیمپئن ہے۔ پاکستان کو دسمبر 2018ء میں ٹورنامنٹ کے انعقاد کا حق دیا گیا تھا۔