وزیراعظم کا کورونا کے چھ ماہ بعد دورہ سندھ عوام کے زخموں پر نمک پاشی ہے، بلاول بھٹو

(آئی این این نیوز)

پاکستان پیپلزپارٹی کےچیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ کراچی میں کورونا وائرس کاپہلا کیس آنے کے 6 ماہ بعد سیلیکٹڈ وزیراعظم نے سندھ کا دورہ کیا۔ سلیکٹڈ وزیراعظم کا دورہ سندھ صرف عوام کے زخموں پر نمک چھڑکنےکے لئےتھا۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ سلیکٹڈ وزیراعظم نے فاقہ کشی اور وباء سے بچاؤ کے لیےکچھ بھی کرنےکو مسترد کر دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وفاقی بجٹ میں وباء کے دوران سندھ کے 229 ارب روپوں پر ڈاکا ڈالا گیا۔ وفاقی بجٹ ناقابل یقین دباؤ کا شکار ہمارے شعبہ صحت کےحق میں نہیں۔ سلیکٹڈ وزیراعظم نے ہمارے کسانوں کو ٹِڈی دل اور معاشی تباہی کے رحم و کرم پر چھوڑدیا ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ وفاقی بجٹ میں بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام کے تحت غریبوں کی امداد کم کی گئی۔ سلیکٹڈ وزیراعظم نے اسٹیل ملز کے10ہزار ملازمین کو نکالنےکا فیصلہ کیا، لیکن ڈیم کی تعمیر کیلئے80 ارب روپے ڈھونڈ نکالے۔

چیئرمین پی پی کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان نے سندھ میں کورونا کیخلاف اگلی صفوں پر جدوجہد کرنے والوں سے ملاقات سے انکار کیا۔ اپنا سب داؤ پر لگا کر ہماری زندگیاں بچانے والے ڈاکٹرز اور سندھ میں ٹیم کو لیڈ کرنے والے وزیراعلیٰ سے عمران خان نے ملاقات سے انکار کیا۔