سونم نے اپنے اُوپر لگنے والے الزمات کیخلاف آواز بلند کردی

(آئی این این نیوز)

14جون کو خودکشی کرنے والے بالی ووڈ کے اُبھرتے ہوئے اداکار سوشانت سنگھ راجپوت کی موت کا ذمہ دار بالی ووڈ میں اقربا پروری کو قرار دیا جارہا ہے، اس حوالے سےسونم کپور نے اپنے اُوپر لگنے والے تمام الزمات کی تردید کرتے ہوئے اُن کے خلاف آواز بلند کردی۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق سوشانت سنگھ کی خودکشی کے معاملے میں فلم ساز کرن جوہر، ایکتا کپور، سونم کپور، عالیہ بھٹ، سلمان خان اور دیگر مشہور شخصیات کے نام سامنے آئے ہیں، کہا جارہا ہے کہ یہ وہ تمام لوگ ہیں جو سازش کے تحت سوشانت کی فلمیں ریلیز نہیں ہونے دیتے۔

پولیس نے تحقیقات کے بعد اس بات کا انکشاف بھی کیا ہے کہ سوشانت کوکسی ایوارڈ یا دوسری تقریب میں مدعو نہیں کیا جاتا تھا کیونکہ اُن کا کوئی گاڈ فادر نہیں تھا۔ سوشانت اپنی ویڈیوز اور ٹاک شوز میں اکثر یہ بات کہتے بھی نظر آئے ہیں کہ ’آپ لوگ میری فلمیں دیکھیں میرا کوئی گاڈ فادر نہیں ہے ،مجھے فلم انڈسٹری سے نکال دیا جائے گا۔ ‘

میڈیا رپورٹس کے مطابق بالی ووڈ کے سینئر اداکار انیل کپور کی صاحبزادی سونم کپور نے اپنے اُوپرلگے الزام کےخلاف آواز بلند کرتے ہوئے کہا ہے کہ آج ہم جو ہیں، جہاں بھی ہیں اپنی محنت سے ہیں۔ ہمارے خلاف غلط باتیں کرنا اور ہم پر الزمات لگانا بند کیے جائیں۔

سونم کپور نے اپنے ایک ٹوئٹ میں انتہائی غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سوشانت کی موت کا ذمہ دار اُن کی گرل فرینڈ، سابقہ گرل فرینڈ ، اُن کے اہل خانہ یا کسی بھی ساتھی اداکار کو ٹھہرانا سراسر غلط ہےاور یہ ایک انتہائی گھٹیا حرکت ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بہار کی جن ادھیکار پارٹی (جے اے پی) کے صدر راجیش رنجن عرف پپو یادو نے بھی اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ ہم بہار میں فلم ساز کرن جوہر اور بالی ووڈ اداکار سلمان خان کی فلمیں ریلیز نہیں ہونے دیں گے، کیونکہ وہ سمجھتے ہیں سوشانت کی موت کے ذمہ دار یہ ہیں۔

دوسری جانب بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ اور بھوجپوری اداکار منوج تیواری نے بھی اداکار سوشانت سنگھ کے خودکشی معاملے میں سی بی آئی جانچ کا مطالبہ کیا ہے۔