پی آئی اے نے طیارہ حادثے کی ابتدائی رپورٹ تسلیم کرلی

پی آئی اے نے کہا ہے کہ طیارہ حادثے کی ابتدائی رپورٹ تسلیم کرتے ہیں اور اسے رہنمائی سمجھتے ہیں۔

ترجمان پی آئی اے کے مطابق حفاظت کے معیار کو مزید بہتر بنانے کے عزم کی تصدیق کرتے ہیں، اصلاحی اقدامات کا اضافی سلسلہ شروع کرچکے ہیں، مشکوک لائسنس کی تحقیقات کو قومی ایئرلائن نے خود اجاگر کیا ہے۔

انہو ں نے کہا کہ پائلٹ کے لائسنسز کی مکمل فرانزک کے عمل کو تیز کرنے کی مسلسل پیروی کی گئی اور اعلیٰ ترین ایگزیکٹو آفس نے بھی اس عمل میں دلچسپی لی ہے، تحقیقات کے نتیجے میں 15 پائلٹس کو گراؤنڈ کیا گیا اور پی آئی اے گراؤنڈ پائلٹوں کی تنخواہوں پر سالانہ 17 کروڑ روپے خرچ کررہی ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ اضافی اخراجات برداشت کئے، مسافروں کے تحفظ پر سمجھوتہ نہیں کیا، سی اے اے سے دیگر مشکوک لائسنسز کی فہرست بھی جلد مانگی گئی ہے۔