بلوچستان میں ICU اور وینٹی لیٹرز کی کمی ہے، لیاقت شاہوانیبلوچستان حکومت کے ترجمان لیاقت شاہوانی کہتے ہیں کہ بلوچستان میں ہمیں آئی سی یوز اور وینٹی لیٹرز کی کمی کا سامنا ہے، جن کی تعداد میں اضافہ کر رہے ہیں۔ ترجمان بلوچستان حکومت لیاقت شاہوانی ’جیو نیوز‘ کے مارننگ شو ’جیو پاکستان‘ میں گفتگو کر رہے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ حکومتِ بلوچستان کورونا وائرس سے زیادہ متاثر ہونے والے علاقوں میں لاک ڈاؤن کر رہی ہے۔

بلوچستان حکومت کے ترجمان لیاقت شاہوانی کہتے ہیں کہ بلوچستان میں ہمیں آئی سی یوز اور وینٹی لیٹرز کی کمی کا سامنا ہے، جن کی تعداد میں اضافہ کر رہے ہیں۔

ترجمان بلوچستان حکومت لیاقت شاہوانی ’جیو نیوز‘ کے مارننگ شو ’جیو پاکستان‘ میں گفتگو کر رہے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ حکومتِ بلوچستان کورونا وائرس سے زیادہ متاثر ہونے والے علاقوں میں لاک ڈاؤن کر رہی ہے۔

لیاقت شاہوانی کا مزید کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی روک تھام کے سلسلے میں شروع میں بلوچستان کے عوام کی جانب سے تعاون نہیں کیا گیا، تاہم اب عوام تعاون کر رہے ہیں۔

بلوچستان حکومت کے ترجمان کا یہ بھی کہنا ہے کہ این ڈی ایم اے کی جانب سے ہمیں طبی آلات اور حفاظتی سامان فراہم کیا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس اتنی تیزی سے پھیل رہا ہے کہ مریضوں کی تعداد کے حوالے سے مرتب کی گئی ممالک کی فہرست میں پاکستان 14 ویں نمبر پر آ گیا ہے۔

پاکستان میں کورونا وائرس اتنی تیزی سے پھیل رہا ہے کہ مریضوں کی تعداد کے حوالے سے مرتب کی گئی ممالک کی فہرست میں پاکستان 13 ویں نمبر پر آ گیا ہے۔

پاکستان میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 1 لاکھ 92 ہزار 970 ہو چکی ہے، جبکہ اس موذی وباء سے جاں بحق افراد کی کُل تعداد 3 ہزار 903 تک جا پہنچی ہے۔

کورونا وائرس کے ملک میں 1 لاکھ 7ہزار 760 مریض اب بھی اسپتالوں، قرنطینہ مراکز اور گھروں میں آئسولیشن میں ہیں، جبکہ 81 ہزار 307 مریض اس بیماری سے صحت یاب ہو چکے ہیں۔

دوسری جانب صوبۂ بلوچستان میںکورونا وائرس کے 9 ہزار 817 مریض اب تک رپورٹ ہوئے ہیں جہاں 108 افراد اس مرض سے انتقال کر چکے ہیں۔