بھارتی جاسوس کلبھوشن کیلئے وکیل مقررکرنےکی حکومتی درخواست سماعت کیلئے مقرر

(آئی این این نیوز)

اسلام آباد ہائیکورٹ نے بھارتی جاسوس کلبھوشن کے لیے وکیل مقررکرنےکی حکومتی درخواست پرخصوصی بینچ تشکیل دے دیا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے 2 رکنی خصوصی بنچ تشکیل دیا ہے جس کی سربراہی خود چیف جسٹس کریں گے جب کہ جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب ان کے ساتھ بینچ کا حصہ ہوں گے۔

عدالت نے حکومت کی کلبھوشن کےلیے وکیل مقررکرنےکی درخواست سماعت کے لیے بھی کرردی ہے جس پر عیدکے فوری بعد 3 اگست بروز  پیرکو خصوصی بنچ سماعت کرےگا۔

حکومت نےحال ہی میں جاری کیےگئےصدارتی آرڈیننس کےتحت درخواست دائرکی جس میں وفاق بذریعہ سیکرری دفاع اور جج ایڈووکیٹ جنرل برانچ جی ایچ کیو کو فریق بنایا گیا ہے۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہےکہ کلبھوشن نےسزا کے خلاف درخواست دائر کرنے سے انکارکیا اور کلبھوشن بھارت کی معاونت کے بغیر پاکستان میں وکیل مقرر نہیں کرسکتا۔

درخواست میں کہا گیا  ہےکہ بھارت بھی آرڈیننس کےتحت سہولت حاصل کرنے سے گریزاں ہے لہٰذا عدالت کلبھوشن کے لیے قانونی نمائندہ مقرر کرے اور حکم دےتاکہ عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کےمطابق ذمہ داری پوری ہو۔