طاقت سے جلسہ روکا گیا تو کارکنوں کو بھی ڈنڈا اٹھانے کی اجازت ہے، مولانا فضل الرحمان

(آئی این این نیوز)

ملتان: 

جے یو آئی (ف) کے سربراہ اور اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم کے قائد مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ ہمیں جلسے سے روکنے کے لیے کوئی ڈنڈا استعمال کرے گا تو کارکنوں کو بھی ڈنڈا اٹھانے کی اجازت ہے۔

ملتان میں پیپلز پارٹی کے رہنما یوسف رضا گیلانی کے ہمراہ میڈیا سے بات کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ حکومت نے روزگار چھین لیے، گھر چھین لیے، تاجر رورہے ہیں، پی ڈی ایم کی طرف سے پورے ملک میں عوامی جلسوں کا سلسلہ جاری ہے، ملتان کی انتظامیہ کی جانب سے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کئے جارہے ہیں، تمام پارٹیوں کے کارکنوں کو گرفتار کیا جارہا ہے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ حکومت ریاستی دہشت گردی پر اتر آئی ہے، کل ملتان میں پی ڈی ایم کا جلسہ ہو کررہے گا، ہم ہر صورتحال کا مقابلہ کرنے کو تیار ہیں، ہم نے تمام صورتحال کا مقابلہ کرنےکیلیے حکمت عملی تیار کرلی ہے، تمام پارٹیوں سے کہنا چاہتا ہوں کہ رکاوٹیں توڑ کر جلسے میں آئیں، پی ڈی ایم کے جلسے کو روکنے پر عوام کا سیلاب انہیں بہا لے جائے گا۔ کوئی ڈنڈا استعمال کرے گا تو کارکنوں کو بھی ڈنڈا اٹھانے کی اجازت ہے۔

اپوزیشن رہنما کا کہنا تھا کہ اگر حکمرانوں نے جلسہ نہ کرنے دیا تو پاکستان کا ہر ضلع جلسہ گاہ بن جائے گا، ہم نے جنوری میں لانگ مارچ کا اعلان کیا تھا لیکن شاید حکمران چاہتے ہیں کہ ہم جلد لانگ مارچ کریں۔

اس موقع پر یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ حکومت نے جلسے سے پہلے ہی جلسہ کامیاب کردیا، آصفہ بھٹو زرداری کل جلسے میں خطاب کریں گی