کے ایم سی بلڈنگ کے تمام دفاتر کو ڈس انفیکٹ کرنے کا سلسلہ جاری

(آئی این این نیوز)

کراچی میٹروپولیٹن کارپوریشن (کے ایم سی) کے افسران کو کورونا سے متاثر شخص کے گلے لگانے کے واقعے کے بعد اب بلدیہ عظمیٰ کراچی کی عمارت کے تمام دفاتر میں جراثیم کش اسپرے کیا جا رہا ہے۔  

کے ایم سی کی عمارت کے تمام دفاتر کو ڈس انفیکٹ کیا جا رہا ہے جب کہ فائر بریگیڈ کی گاڑی کی مدد سے پوری بلڈنگ کے فرش کی دھلائی بھی کی جا رہی ہے۔

گزشتہ روز کورونا وائرس کا شکار معطل افسر کے ایم سی کے دفتر آیا تھا اور اس نے سینئر ڈائریکٹر ایچ آر ایم جمیل فاروقی کو گلے لگایا تھا اور ان کے گال پربوسہ بھی دیا تھا۔

بعدازاں تنخواہ روکنے پر کورونا کے متاثرہ مریض افسر کی جانب سے ڈائریکٹر ایچ آر ایم کو گلے لگانے اور بوسہ لینے کے معاملے کا مقدمہ کے ایم سی افسر شہزاد انور کے خلاف درج کیا گیا جو متاثرہ ڈائریکٹر ایچ آر جمیل فاروقی نے درج کرایا۔

واضح رہےکہ کورونا وائرس سے متاثرہ افسر نے گزشتہ روز ڈائریکٹر ایچ آر سے ملنے کے بعد اپنے کورونا کے مریض ہونے کا انکشاف کیا تھا، کورونا مریض نے ایڈمنسٹریٹر سیکٹریٹ میں جاکر بھی افسران سے ملاقات کی تھی۔

سینئر ڈائریکٹر ایچ آر ایم جمیل فاروقی کے مطابق متاثرہ مریض شہزار انور اسسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈ لانڈھی تعینات تھا، شہزاد انور کو 5 اکتوبر کو کرپشن کی شکایت پر معطل کیا گیا تھا اور ایچ آر ایم کو رپورٹ نہ کرنے پر تنخواہ روک لی گئی تھی۔