شاہد خاقان عباسی کی حفاظتی ضمانت منظور

 ایم ڈی پی ایس او تعیناتی کیس میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی حفاظتی ضمانت منظور کرلی گئ ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے  ایم ڈی پی ایس او تعیناتی کیس میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی حفاظتی ضمانت منظور کرتے ہوئے تین ہفتوں کے لیے ضمانت منظور کرلی ہے۔

کیس کی سمعت چیف جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل بینچ نے کی ۔

عدالت میں شاید خاقان عباسی کے وکیل نے بتایا کہ لاک ڈاؤن کے باعث شاید خاقان عباسی احتساب عدالت پیش نہیں ہوسکتے جس پر عدالت نے سوال کیا کہ یہ لاک ڈاؤن کب تک چلے گا؟

فنکاروں کے لئے بھی ریلیف پیکج تیار

یاد رہے کہ اس سے قبل سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اسلام آباد ہائی کورٹ پہنچے تھے جبکہ شاہد خاقان عباسی نے راہداری ضمانت کے لیے عدالت سے رجوع کر رکھا تھا

 شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن ختم ہونے تک راہداری ضمانت دی جائے، کراچی کی احتساب عدالت نے 26 مارچ کو وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے تھے۔
30 انہوں نے بتایا کہ مارچ کو اسلام آباد ہائی کورٹ نے 12 مئی تک راہداری ضمانت منظور کی تھی اور عدالت نے 12 مئی تک کراچی کی متعلقہ کورٹ میں پیش ہونے کی ہدایت بھی کی تھی۔
سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ کورونا وائرس کے باعث ملک بھر میں لاک ڈاؤن ہے اور لاک ڈاؤن کے دوران ملک بھر میں ایئر ٹریفک اور ریل کا سفر معطل ہے، وفاقی اور سندھ حکومت نے بھی لاک ڈاؤن میں 15 مئی تک توسیع کر رکھی ہے اور لاک ڈاؤن کے باعث 12 مئی سے قبل کراچی کی عدالت میں پیش ہونا ممکن نہیں ہے۔
شاہد خاقان کی جانب سے  پیش کی گئی تھی کہ راہداری ضمانت منظور کی جائے تاکہ لاک ڈاؤن ختم ہونے پر احتساب عدالت میں پیش ہو سکوں