’تمام سکیورٹی ایجنسیاں شہریوں کے تحفظ میں ناکام ہوگئیں‘

(آئی این این نیوز)

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس محسن اختر کیانی نے لاپتا شہری کی بازیابی کے کیس میں ریمارکس دیے کہ  تمام سکیورٹی ایجنسیاں شہریوں کے تحفظ میں ناکام ہوگئیں۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس محسن اختر کیانی نے لاپتا شہری عمرعبداللہ کی بازیابی کے معاملے پر سماعت کی۔

دورانِ سماعت جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیےکہ مغوی بازیاب نہ ہوا تو متعلقہ افسران تیاری کرکے آئیں، جیل بھیجوں گا، سابقہ کے بعد موجودہ آئی جی اور سیکرٹری داخلہ کےخلاف بھی کارروائی ہوگی۔

معزز جج نے مزید کہا کہ لاپتا افراد حکومت کی نااہلی اور ریاست کی ناکامی ہیں، 6،6 سال سے آپ نے لوگوں کو اٹھایا ہوا ہے، ریاست نے ہی جواب دینا ہے، دوسرے ملک سے کوئی نہیں آئے گا جواب دینے۔

عدالت کا کہنا تھا کہ اسلام آباد پولیس صرف چھوٹے جرائم کو روک سکتی ہے، لوگوں کو بازیاب کرانا ان کے بس کی بات نہیں، تمام سکیورٹی ایجنسیاں شہریوں کے تحفظ میں ناکام ہوگئیں۔

عدالت نے اس وقت کے سیکرٹری داخلہ، دفاع اور  آئی جی کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ذاتی حیثیت میں19 جنوری کو طلب کرلیا۔